تازہ ترین  
loading...

مرے احساس پر تیری صدا سے چوٹ لگتی ہے
    |     4 months ago     |    شاعری
نہیں آو کہ اب آوازِ پا سے چوٹ لگتی ہے
مرے احساس پر تیری صدا سے چوٹ لگتی ہے

تجھے خود اپنی مجبوری کا اندازہ نہیں شاید
نہ کر عہد وفا ُ عہد وفا سے چوٹ لگتی ہے

یہ سب باتیں مناسب ہیں مگر پھر بھی میرے ہمدم
تغافل کی ترے ہلکی ادا سے چوٹ لگتی

ہواو تم ذرا ٹھہرو نہ خوشبو ایسے بکھراو
میں نازک ہوں مجھے باد صبا چوٹ لگتی ہے

یہ خط اپنے سنبھالو تم، حسیں لمحے بھی لے جاو
مجھے ایسی محبت کی عطا سے چوٹ لگتی ہے

تمہارے بعد رنگینی کوئی بھاتی نہیں مجھ کو
ہتھیلی کو بھی اب رنگ حنا سے چوٹ لگتی ہے

میری دھڑکن میں جن بے تابیوں نے ڈیرا ڈالا ہے
انہی بے تابیوں کی انتہا سے چوٹ لگتی ہے

بہت حساس ہے زریاب کو جھکنا نہیں آتا
قبا پھولوں کی بھی ہو تو قبا سے چوٹ لگتی ہے
................................
شاعرہ: ہاجرہ نور زریاب
آکولہ مہاراشٹر انڈیا
loading...
Feedback
Dislike
 
Normal
 
Good
 
Excellent
 




فیس بک پیج

تصویری خبریں

ad

نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2017 apkibat. All Rights Reserved