تازہ ترین  
Tuesday
12-12-17

مرزامحمدیاسین بیگ اورقومی اہل قلم کانفرنس
    |     2 weeks ago     |    گوشہ ادب
قلم قبیلے کی صلاحیتوں کواجاگرکرنے اور ادب کی دنیا میں نئے لکھنے والوں کو سیکھنے کے موقع فراہم کرنے کے لئے بہت سی ادبی تنظیموں نے کام کیا ہوگا اور کر بھی رہی ہیں۔ مگرپاکستان رائٹرزونگ اس مقصد کے لئے کس قدر کوشاں ہے اس کی مثال کہیں نہیں ملتی۔ گذشتہ چند سالوں میں پاکستان رائٹرزونگ نے ادب کی دنیا میں جو نام کمایا ہے اس کا سہرا عظیم ادبی شخصیت، سینئرکالم نگار اور پاکستان رائٹرزونگ کے چیئرمین جناب مرزا محمد یاسین بیگ صاحب کو جاتا ہے۔مرزامحمد یاسین بیگ صاحب درویش صفت اور نہایت خوبصورت شخصیت کے مالک ہیں اور ان کا ظاہر جس قدر پاک ،صاف اور خوبصورت ہے اسی قدر ان کا باطن بھی خوبصورت ہے۔ مرزا صاحب کی تعریف کن الفاظ میں کروں؟ الفاظ کم پڑ جائیں گے مگر ان کی صفات بیان نہیں کر سکتا۔۔۔مرزا صاحب لکھاری حضرات کے لئے ایک مسیحا ہیں جنہوں نے لکھنے والوں کے لئے ایک ایسا پلیٹ فارم دیاکہ جس میں وہ اپنے ہنر میں مزید نکھار پیدا کر سکیں، اور آنے والے وقتوں میں ادب کی دنیا میں اپنا نام پیدا کریں۔ مرزاصاحب کا مقصدادب کو فروغ دینا، قلم کی طاقت اور قلم کاصحیح استعمال کرنا اور لکھنے والوں کے لیے ایسے مواقع پیدا کرنا ہے جن سے انہیں سیکھنے کا موقع مل سکے ۔اس عظیم مقصدکو پورا کرنے کے لئے جناب مرزا محمد یاسین بیگ صاحب نے پاکستان بھر کے لکھاریوں کو اکٹھا کیا اور19نومبر2017ء کو بابا بلھے شاہ کی نگری(قصور) میں قومی اہل قلم کانفرنس منعقد کی۔یاد رہے کہ اس سے قبل بھی مرزا صاحب ملتان اور ننکانہ صاحب میں ایسی کانفرنس کا نعقاد کروا چکے ہیں۔
قومی اہل قلم کانفرنس ڈسٹرکٹ کونسل ہال قصور میں انعقاد پذیر ہوئی جس میں پاکستان بھر سے لکھنے والے حضرات نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ اس عظیم کانفرنس کے مہمانان گرامی مجیب الرحمان شامی صاحب (ایڈیٹر روزنامہ پاکستان)،حافظ شفیق الرحمان صاحب (ایڈیٹوریل ایڈیٹر روزنامہ نئی بات) ، محمد سجاد جہانیہ صاحب(سینئر کالم نگار روزنامہ خبریں، ڈائریکٹر ملتان آڑٹس کونسل)، زاہد حسن صاحب (عالمی ایوارڈ یافتہ ، مشہورومعروف افسانہ و ناول نگار)، پروفیسر ڈاکٹر اختر حسین عزمی صاحب (شاعر، ادیب)، محمد اقبال خان منج صاحب(کالم نگار روزنامہ نئی بات ، ڈائریکٹر قصور میوزیم)، انور زاہد صاحب (شاعر) ، رائے محمد خان ناصرصاحب (معروف پنجابی شاعر) اور جناب ملک اعجاز احمد خان صاحب (سنیئروائس چیئرمین ضلع قصور) تھے جنہوں نے ہال کی رونق کو دوبالا کیا ہوا تھا۔
کانفرنس کا باقاعدہ آغازکلام پاک سے کیا گیا ۔ تلاوتِ کلام پاک کے بعد قاری محمد جمیل صاحب نے اپنی خوبصورت آواز میں ہدیہ نعت پیش کیا اور حاضرین محفل سے ڈھروں دعائیں سمٹیں۔ نعت و تلاوت کے بعد پروگرام اپنی منزل کی طرف رواں دواں رہا اور باری باری سب مہمانوں نے علم و ادب کے حوالے سے اپنی اپنی رائے کا اظہار کیا اور اپنے علم و عمل اور تجربہ کی بنیاد پر نئے لکھنے والوں کو بہت سی باتیں بتائی گئیں۔ اس حوالے سے جناب پروفیسر اختر حسین عزمی صاحب نے قلم کے صحیح اور غلط استعمال اور معاشرے میں اس کے اچھے اور برے اثرات پر روشنی ڈالی۔ پروفیسر صاحب نے کہا کہ قلم ایک بہت بڑی طاقت ہے جس کا صحیح استعمال کر کے معاشرے کو بُرائیوں سے روکا جا سکتا ہے۔ جناب سجاد جہانیہ صاحب اور اقبال خان منج صاحب نے کالم نگاری پر لیکچر دیتے ہوئے کالم نگاری کی اہمیت واضح کرتے ہوئے کہاکہ کالم نگار اپنی اہمیت صرف اسی بات سے جان لے کہ ایک کالم کو اخبار میں اس قدر جگہ سی جاتی ہے جتنی کسی اخبار کی مین خبر کو بھی نہیں دی جاتی۔ پوری اخبار میں سینکڑوں کی تعداد میں خبریں ہوتی ہیں مگر ان کی نسبت صرف چند ایک کالم کی لکھے ہوتے ہیں۔ سجاد جہانیہ صاحب نے مثبت کالم نگاری پرزور دیا۔ حافظ شفیق الرحمان صاحب نے کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی کانفرنس سے نئے لکھنے والوں کو اپنے سینئرزسے بہت کچھ سیکھنے کو ملتا ہے اور اس طرح کے پروگرام کروانے سے علم و ادب کو فروغ دینے میں مد د ملتی ہے۔ حافظ شفیق الرحمان صاحب نے مرزا محمد یاسین بیگ صاحب کی اس کاوش کو سراہتے ہوئے انہیں داد دی اور آئندہ بھی اس طرح کے پروگرام منعقد کرواتے رہنے کی تلقین کی اور یہ بھی کہا کہ آئندہ اس طرح کے پروگرامز میں مرزا محمد یاسین بیگ صاحب کو جہاں بھی ہماری ضرورت ہوئی ہم شانہ بشانہ ان کا ساتھ دیں گے(ان شاء اللہ)۔
کانفرنس میں شعبہ صحافت میں اعلی کارکردگی دیکھانے والے اور ادب کی دنیا میں نئے لکھنے والوں کی حوصلہ افزائی کے لئے قلم کاروں کو ایوارڈ زبھی دئے گئے۔ ان ایوارڈز کو مجیب الرحمان شامی ایوارڈ، محمد سجاد جہانیہ ایوارڈ، حافظ شفیق الرحمان ایوارڈ اور علی اکمل تصور ایوارڈ سے منسوب کیا گیا ۔کانفرنس کے احتتام پر شرکت کرنے والوں کی تواضع کا بھی انتظام کیا گیا تھا۔اس کامیاب کانفرنس پر پاکستان رائٹرزونگ کی پوری ٹیم ، بالخصوص مرزا محمد یاسین بیگ صاحب(چیئرمین)اور پیارے بھائی ملک محمد شہاز(صدر پنجاب) حصوصی مبارک باد کے حق دار ہیں۔ اللہ پاک مرزا یاسین صاحب اور بھائی ملک شہباز کو علم و ادب کے فروغ کے لئے اسطرح کے مزید پروگرامز کے انعقاد کی توفیق عطا فرمائے۔ اور علم و ادب کے فروغ میں کوشاں ان دونوں شخصیات کو سلامت رکھے۔ آمین
Feedback
Dislike
 
Normal
 
Good
 
Excellent
 




Follow Us

Picture stories


Tv Channel
News Paper Links
Websites Links
تعارف / انٹرویو
مقبول ترین

دلچسپ و عجیب



     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2017 apkibat. All Rights Reserved