تازہ ترین  

مقابلہ مضمون نویسی "عظمت ماں"کے نتائج
    |     4 months ago     |    گوشہ ادب
مقابلہ مضمون نویسی "عظمت ماں"کے نتائج 

السلام علیکم۔۔۔کیسے ہیں آپ سب؟؟؟
مقابلہ مضمون نویسی "عظمت ماں" کے نتائج کے ساتھ حاضر ہیں۔مقررہ وقت تک ٹوٹل 17 مضامین موصول ہوئے ۔جن کے نتائج مندرجہ ذیل ہیں۔
مقابلہ مضمون نویسی کی شرائط یہ تھیں۔
۱۔مضمون کسی بھی فورم پر شائع شدہ یا نقل شدہ نہ ہو۔
۲۔مضمون میں کوئی واقعہ یا اقتباس شامل کیا جائے تو اس کا حوالہ دیا جائے۔
۳۔الفاظ کی تعداد 300 سے 500 کے درمیان ہو۔
۴۔مقابلے میں شرکت کے خواہشمند آ پکی بات فیس بک پیج لائک کریں اور مقابلے کی پوسٹ شیئر کریں۔
۵۔مضمون اردو میں کمپوزڈ شدہ ہو اور اس پوسٹ کے کمنٹ میں بھیجا جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔
پہلی شرط کے لحاظ سے عمامہ ثمین کا مضمون خارج کیا گیاکیونکہ ان کی طرف سے فیس بک آئی ڈی پر شیئر کردیا گیا تھا ۔
دوسری شرط پر بھی بہت کم لوگوں نے عمل کیا تاہم اس شرط میں کچھ نرمی کردی گئی۔۔۔البتہ جس نے اس شرط کو بہتر طور پر پورا کیا اسے ترجیح دی گئی۔
تیسری شرط میں کچھ نرمی کی گئی جس کے مطابق (300 ~500 ) کی جگہ 50 الفاظ جمع یا نفی کی رعایت دی گئی ۔ جس کے باوجود صرف دس مضامین مقابلے میں شمولیت کے حقدار ٹھہرے۔
چوتھی شرط کی بہت ہی کم احباب نے پورا کیا جس کے باعث اس شرط کو اگنور کر دیا گیا۔
چونکہ کچھ احباب کو مضامین بھیجنے میں پریشانی کا سامنا ہوا اور وہ کمنٹ میں نہ بھیج سکے اس لیے پانچویں شرط میں بھی کسی حد نرمی کی گئی اور ای میل یا انباکس میں آنے والے مضامین بھی شامل کردیئے گئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مضامین چیک کروانے کے لیے تین قلمی دوستوں سے درخواست کی گئی جنہوں نے بھرپور محنت ، لگن اور خلوص سے یہ عمل سرانجام دیا اور یہ سلسلہ مکمل طور پر خفیہ رکھا گیا حتیٰ کہ تینوں ججزمیں سے بھی ہر ایک کو یہی معلوم تھا کہ اس کے علاوہ دو جج مزید چیک کررہے ہیں ۔تینوں ججز کے نتائج آنے کے بعد تیسری شرط (تعداد) کے لحاظ سے پرکھا گیا تو سات مضامین مقابلے سے نااہل قرار پائے ۔بقیہ دس مضامین تین ججز کے نتائج سامنے رکھتے ہوئے ترتیب بنائی گئی بعد ازاں ایک مرتبہ پھر ان دس مضامین کو غور سے پڑھا گیا۔تمام احباب نے انتہائی محبت و الفت اور محنت و لگن سے مضامین لکھے اور ان تمام مضامین میں ماں سے محبت کے بھر پور نذرانے نظر آئے۔ چونکہ تمام مضامین ماں سے بے پناہ محبت کے جذبے کے تحت لکھے گئے تھے شاید یہی وجہ تھی کہ ہر مضمون دوسرے سے بڑھ کر نظر آیاجس کی وجہ سے فیصلہ کرنا انتہائی مشکل ہورہا تھا ۔ مکمل غیر جانبداری اور ججز کے نتائج کو سامنے رکھتے ہوئے فائنل رزلٹ پوری ایمانداری سے تیار کیا گیا ہے امید ہے آپ سب کے نزدیک بھی یہی نتائج ہوں گے۔چونکہ یہ مقابلہ نئے لکھنے والوں کے لیے تھا اس لیے املاء کی چھوٹی موٹی غلطیوں کو جہاں تک ممکن ہوا نظر انداز کیا گیاتاہم آئندہ کسی بھی مقابلے میں حصہ لینے سے پہلے املاء کی غلطیوں کو دور کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے اور اس کا بہترین حل تحریر بھیجنے سے قبل چار ، پانچ پرتبہ پڑھ کر بھیجی جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔
الفاظ کی تعدادبہت زیادہ ہونے کے سبب جو مضامین مقابلے سے خارج ہوئے ان کے رائٹرز کے نام بمعہ الفاظ کی تعداد مندرجہ ذیل ہیں۔
مریم شہزادی۔(723 الفاظ)
اقراء نور ۔ (706 الفاظ)
عمارہ کنول ۔ (660 الفاظ)
کامران خان ۔ (846 الفاظ)
عثمان گجراتی۔(1204 الفاظ)
صنم احمد۔ (205 الفاظ)
عمامہ ثمین۔(پہلے سے شائع شدہ)
۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جن رائٹرز کے مضامین مقابلے میں شرکت کے اہل پائے گئے ان کے نام بمعہ الفاظ کی تعداد مندرجہ ذیل ہیں۔
محمد طلحہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔(365 الفاظ)
ممتاز غزنی۔ ۔۔۔۔۔۔(541 الفاظ)
ابوذر رحیمی۔۔۔۔۔۔۔(440 الفاظ)
حافظہ مبشرہ زہرہ ۔۔۔۔(445 الفاظ)
عبدالرشید جلالی۔۔۔۔(387 الفاظ)
اسامہ زاہروی۔۔۔۔۔(390 الفاظ)
عنایہ فاطمہ۔۔۔۔۔۔(461 الفاظ)
خدیجہ کشمیری۔۔۔۔۔۔(487 الفاظ)
نبیلہ خان۔۔۔۔۔۔۔(397 الفاظ)
غلام یسین نوناری۔۔(495 الفاظ)
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ٹاپ تین پوزیشن ہولڈرز کے نام مندرجہ ذیل ہیں جو کہ بالترتیب پہلے تین انعامات کے حقدار ٹھہرے ہیں۔
1۔حافظہ مبشرہ زہرہ
2 ۔ عبد الرشید جلالی
3۔ اسامہ زاہروی

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
چھ اعزازی پوزیشن ہولڈرز کے نام بالترتیب مندرجہ ذیل ہیں جو کے انعام کے حقدار ٹھہرے ہیں۔
1 ۔ ابوذر رحیمی
2 ۔ غلام یسین نوناری
3 ۔محمد طلحہ
4۔عنایہ فاطمہ
5 ۔ خدیجہ کشمیری
6 ۔ نبیلہ خان
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
موسٹ ایکٹیو ممبرکے لحاظ سے فیصلہ کرنا بھی انتہائی مشکل ثابت ہوا، تمام احباب نے بھر پور محبتوں کا ثبوت دیا جس پر بے حد شکر گزار ہیں۔ اقراء نور ، ممتاز غزنی ، محمد طلحہ ، عمارہ کنول ، غلام یسین نوناری ، میر اسامہ ، حافظہ مبشرہ زہرہ ، ابوذر رحیمی اور ندیم عباس میواتی صاحبان لمحہ بہ لمحہ ایکٹو رہے جس کے باعث یہ مقابلہ کامیابی کے مراحل طے کرپایا۔ تمام احباب کے تہہ دل سے ممنون ہیں تاہم کسی ایک ممبر کو انعام تو دینا ہی ہے لیکن بار بار غور کرنے کے باوجود بھی کوئی ایک ممبر منتخب نہ کیا جاسکا جس کی وجہ سے ایک کی بجائے تین ممنران کا انتخاب کیا گیا ہے ۔مقابلے کے دوران گروپ اور پیج پر ایکٹیو نظر آنے والے مندرجہ ذیل تین افراد کا انتخاب کیا گیا ہے۔
1۔اقراء نور
2۔ممتاز غزنی
3۔میر اسامہ
ان تین ممبران کوخصوصی تحفہ دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تمام ججز اور ایڈمنز کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں جن کی بھر پور محنت ،لگن اور محبت کے سبب یہ شاندار مقابلہ منعقد کیا جا سکا۔ ججز کے نام خفیہ ہی رکھے جائیں گے ان کی محبتیں سر آنکھوں پر۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
انعامات:
پہلے تین پوزیشن ہولڈرز کو ہمارے مخلص بھائی کی جانب سے 100 ، 100 روپے کا موبائل بیلنس دیا جائے گا جبکہ ندیم عباس میواتی کی جانب سے ایک ایک خوبصورت کتاب دی جائے گی۔ مقابلے میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے والے رائٹر کو 100 روپے کے بیلنس اور ندیم عباس کی طرف سے کتاب کے ساتھ ساتھ ایک خوبصورت کتاب نوناری کتاب گھر کی جانب سے بھی دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
چھ اعزازی پوزیشنیں حاصل کرنے والے رائٹرز کو ہمارے دوست کی جانب سے پچاس پچاس روپے کا موبائل بیلنس دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
آپکی بات ڈاٹ کام ، فیس بک پیج اور ووئی آر رائٹرز(We are Writers)گروپ کی جانب سے نئے مقابلے کا اعلان بہت جلد کر دیا جائے گا۔امید ہے آپ سب آئندہ بھی شرکت فرمائیں گے۔آپ سب کا بہت بہت شکریہ
منجانب: آپکی بات ڈاٹ کام ، آپکی بات فیس بک پیج ، ووئی آر رائٹرز گروپ ، ایڈمنز پینل 
Feedback
Dislike
 
Normal
 
Good
 
Excellent
 




فیس بک پیج

تصویری خبریں

ad

نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2017 apkibat. All Rights Reserved