تازہ ترین  

نہ خالد نہ قاسم نہ کو ئی عمر ہے مدد کرنے طارق
    |     4 months ago     |    شاعری
ہر اک جز پڑا ہے زمیں پہ ہمارا
لہو بہہ رہا ہے تماشا بنے ہیں
رہے گا سدا یاد یہ درد اپنا.......
نہ بهولے گا جو وہ فسانہ بنے ہیں

مری سسکیوں پر تڑپتا ہے تو بهی
حمایت کو اپنی تم آتے نہیں ہو
چھپے ہو گهروں میں ہوں نامرد جیسے
کیوں عزت ہماری بچاتے نہیں ہو

عوض چند پیسوں کے عزت کو بیچا
سوا سانس کے اور کیا ہی رکها ہے
اگرچہ ہوں زندہ مگر لاش جیسا
کبهی قتل اپنے ہی ہاتهوں کیا ہے

نہ خالد نہ قاسم نہ کو ئی عمر ہے
مدد کرنے طارق بهی آتا نہیں ہے
خدا مہرباں ہے پرکهتا ہے تم کو
بے مقصد وہ کچھ بھی بناتا نہیں ہے

بہت خوش ہے مغرب مری بے بسی پر
نہیں کوئ ساتهی میں تنہا کهڑا ہوں
میں کب تک تڑپتا سسکتا رہوں گا
یہ کہتے ہو کیوں تم سراپا خطا ہوں
اریبہ فاطمہ۔۔۔۔۔۔سیالکوٹ
Feedback
Dislike
 
Normal
 
Good
 
Excellent
 




فیس بک پیج

تصویری خبریں

ad

نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2017 apkibat. All Rights Reserved