تازہ ترین  

کبھی گھاٹیوں میں بسائےگئے ہم
    |     4 months ago     |    شاعری
کبهی گھاٹیوں میں بسائےگئے ہم
یتیموں کی صورت رلائےگئے ہم
ستم ظالموں کے یوں بڑهتے گئے ہیں
کہ اپنے ہی ہاتهوں جلائے گئے ہم
نہ شکوہ کیا ہے نہ آنسوبہائے
اگرچہ جہاں میں ستائے گئے ہم
کبهی حاکم ِوقت، پر اب ہیں تنہا
فقیروں کی صورت ہٹائے گئے ہم
کبهی تاج بن کر سجائے گئے ہم
کبهی راکھ بن کر اڑائے گئے ہم
یہ تها جرم اپنا کہ حق بات کہہ دی
تو زنداں کی رونق بنائے گئے ہم
قضا نے وفا کی کیا بوجھ ہلکا
سکوں سے لحد میں لٹائے گئے ہم
اریبہ فاطمہ۔سیالکوٹ
Feedback
Dislike
 
Normal
 
Good
 
Excellent
 




فیس بک پیج

تصویری خبریں

ad

نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2017 apkibat. All Rights Reserved