تازہ ترین  

غزل
    |     4 months ago     |    شاعری
یہ درد کا طوفان ہے، چلنے نہیں دیے گا
میرا جنون مجھ کو مگر رکنے نہیں دے گا

مّدت سے کئی زخم مجھے توڑ رہے ہیں
بس عشق تیرا مجھ کو بکھرنے نہیں دے گا

راہ سے بھٹک جانے کا جو خوف ہے مجھے
پُرلطف جزیروں پہ اترنے نہیں دے گا

بے مثل ہیں یہ تیرے ہجر کی عنایات
روئے تو خون آنکھ سے گرنے نہیں دے گا

محبت کا اک سنہری جو خواب تھا دیکھا
وہ خواب کبھی مجھ کو جینے نہیں دے گا
Feedback
Dislike
 
Normal
 
Good
 
Excellent
 




فیس بک پیج

تصویری خبریں

ad

نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2017 apkibat. All Rights Reserved