تازہ ترین  

بچوں کی تعلیم وتربیت والدین کی ذمہ داری
    |     4 months ago     |    گوشہ اطفال
بچوں کی تعلیم وتربیت والدین کی ذمہ داری ۔۔۔حافظ زاہد مقبول ۔۔۔آپکی بات

بچے کی پرورش والدین کی مشترکہ ذمہ داری ہے.اس پرورش پر انسان کی زندگی کی اچھائی اور برائی منحصر ہوتی ہے.بچے کی ابتدائی عمر ماں کی گود میں گزرتی ہے.اس لیے ماں کی گود کو پہلی درس گاہ کرار دیا گیا ہے. بچے کی پرورش کی ذمہ داری کا یہ مطلب نہیں کہ جسمانی نشوونما پر توجہ دیں ,بلکہ اس کے ساتھ ساتھ ذہنی اخلاقی تعلیم وتربیت کا مناسب انتظام بھی کریں,اگر والدین نے بچے کی جسمانی پرورش اور صحت و تندرستی کی دیکھ بھال تو کی لیکن اس کےباطن پرکوئی توجہ نہ دی تو انہوں نے معاشرہ میں اصلاح کی بجاے فساد کا بیج بودیا.جو بڑا ہو کر خانداں اور معاشرے کے لے دینی اخلاقی لحاظ سے مضر ثابت ہو گا.
اسلام نے سب سے پہلی وحی میں جس بات کا درس دیا وہ تعلیم ہے. (اقراء) پڑھ اپنے رب کےنام سے جس نے پیدا کیا.جس نے قلم کے ذریعہ علم سکھایا اور انسان کو وہ باتیں سکھائیں جس کااسکو علم نہ تھا,( سورۃ علق)
علم ایسی چیز ہے جس کی بنیاد پر بشر کو نوری پر فضلیت ملتی ہے.
حدیث مبارکہ میں علم کی بہت فضلیت بیان کی گئی ہے. حضوراکرم کا ارشاد ہے علم حاصل کرنا ہر مرد عورت پر فرض ہے,
ایک اور جگہ پر فرمایا علم حاصل کرو ماں کی گود سے لیکر قبر کی لحد تک. معلوم ہوا انسان کی عظمت کا راز علم میں مضمر ہے,,یہی پوشیدہ راز تربیت کے ساتھ بھی گہرا تعلق رکھتا ہے. تربیت کو تعلیم سے الگ نہیں کر سکتے کیونکہ آقا دوجہاں کی بعثت کے مقاصد میں اہم مقصد تزکیہ نفس تھا. حضور انور نے بزاتِ خود حضرت زید" حضرت علی" اور حضراتِ حسینین کریمین کی تعلم و تربیت کا اس قدر اہتمام فرمایا جس کی نظیر پیش کرنے سے دنیا قاصر ہے,,,,
اس سے ظاہر ہوا کہ اولاد کی تعلیم و تربیت کی ذمہ داری والدین پر اس لیے ضروری تاکہ انسان اپنے علم وعمل کے ذریعہ ملکُ مِلت کی تعمر و ترقی میں اہم کردار ادا کر سکیں ,,"





Comments


There is no Comments to display at the moment.



فیس بک پیج


مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2018 apkibat. All Rights Reserved