تازہ ترین  

پاکستان رائٹرزکونسل کے زیراہتمام قصور میں " عید ملن مشاعرہ" کا انعقاد
    |     2 months ago     |    گوشہ ادب
پاکستان رائٹرز کونسل کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اس کی متحرک ٹیم ماہانہ اور سہ ماہی بنیادوں پر ایسی تقریبات منعقد کرواتی ہے جس سے اہل علم و قلم کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا ہونے کا موقع ملتا ہے۔یوں جونیئر اور سینئر ادباء کو ایک ساتھ بیٹھانے کا سہرا مکمل طور پر پاکستان رائٹرز کونسل کے چیئرمین جناب مرزا محمد یٰسین بیگ صاحب کوجاتا ہے۔ مرزاؔ صاحب لاہور، ننکانہ صاحب، ملتان اور قصور میں ایسی کئی تقریبات منعقد کروا چکے ہیں جس سے اہل علم و قلم کو بہت کچھ سیکھنے کے ساتھ ساتھ تفریح کا موقع بھی ملا ہے۔25 اگست 2018 بروز ہفتہ کوبابا بلھے شاہ کی نگری (قصور) میں،گورنمنٹ اسلامیہ ڈگری کالج کے ہال میں ایک مرتبہ پھر اہل علم و قلم کو "عید ملن مشاعرہ" کے بہانے اکھٹاکیا گیا۔ تقریب کی صدارت معروف کالم نگار، شاعر اور ایڈیٹوریل انچارج روزنامہ دن جناب علی اصغر عباس صاحب نے کی۔ ملک بھر سے نامور شعراء کرام کے ساتھ ساتھ ادب سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔ تقریب شروع ہونے سے پہلے ہی ہال میں موجودتمام نشستیں پُر ہو چکی تھیں۔
حسب روایت مرزا محمد یٰسین بیگ صاحب نے تقریب کا آغاز کرواتے ہوئے محترم ابوذر رحیمی کو تلاوت کلام پاک کے لئے سٹیج پر آنے کی دعوت دی جبکہ نعت رسول مقبول ﷺ کے لئے راقم الحروف کو سٹیج پر بلایا گیا۔ تلاوت و نعت کے بعد مرزا ؔ صاحب نے نقابت کی ذمہ داری پاکستان رائٹرزکونسل کے صدر الطاف احمد کو سونپتے ہوئے تقریب کو آگے بڑھانے کی تلقین کی۔الطاف احمد نے صدرِ محفل علی اصغر عباس صاحب کے ساتھ زاہد حسن صاحب سرپرست اعلیٰ پاکستان رائٹرز کونسل، اور مہمانان خصوصی معروف شاعررائے محمد خان ناصر صاحب، یعقوب پرواز صاحب، محمد افضل عاجز صاحب، عبدالرؤف شاہ صاحب نبی پوری،ڈاکٹر مسعود اقبال ساجد صاحب اور محمد اقبال خان منج صاحب کو سٹیج پر لگی مخصوس نشستوں پر بیٹھنے کی استدعا کی۔حاضرین محفل کے ذوق و شوق نے تقریب کو چار چاند لگا ئے ہوئے تھے۔ نقیب محفل الطاف احمد نے اپنا مختصر کلام پیش کیا اور تقریب کو آگے بڑھاتے ہوئے پاکستان رائٹرزکونسل کے وائس چیئرمین حسیب اعجاز عاشر کو سٹیج پر آنے کی دعوت دی۔ ان کی مختصر حاضری کے بعد رائیونڈ سے آئے ہوئے شاعر میاں محمد جمیل احمد نے اپنا نعتیہ کلام پیش کر کے حاضرین تقریب سے خوب داد وصول کی۔مقامی شعراء کرام میں مرزا خرم بیگ، سلیم آفتاب، ندیم احسان راؤ، لطیف اشعر،منور غنی،فرحت اللہ خان سوری، عظمت اللہ خان ، شریف انجم ، عباس سوز اور مہمان شعراء میں محمد ذاکر، فرح محمود، رانا اعجاز خان منج، الطاف ضامن چیمہ،پروفیسر نوید باد، ولی محمد عظمی ، عمیر علی واصف، حافظ عامر شہزاد، وسیم ساغر، بخت فقیر اور عابدعمر کے ساتھ دیگر کئی شعراء کرام نے سٹیج پر باری باری حاضری دی اور سامعین سے ڈھیروں واہ واہ اور داد وصول کی۔جناب محمد اقبال خان منج صاحب نے خوبصورت نثر پڑھ کر حاضرین محفل سے خوب دا د سمیٹی۔
معروف شاعرمحترم یعقوب پرواز صاحب نے اپنا مشہور نعتیہ کلام پڑھ کر سامعین کے دل جیت لئے اور حاضرین سے خوب داد وصول کی۔ جناب عبدالرؤف شاہ صاحب اور مشہور گیت نگار محمد افضل عاجز نے اپنا اپنا مترنم کلام پیش کر کے تقریب کو ایک نیا رنگ دے دیا۔ننکانہ سے آنے والے شاعر جناب انور زاہد صاحب نے بھی سٹیج پر اپنی مختصر حاضری دیتے ہوئے سامعین سے داد وصول کی جبکہ جناب رائے محمد خان ناصر صاحب نے اپنا پنجابی کلام اور ٹپے سنا کر سننے والوں کو واہ واہ کرنے پر مجبور کردیا ۔ آخر میں صدرِ محفل جناب علی اصغر عباس صاحب نے چند غزلوں اور نظموں پر مشتمل اپنا کلام حاضرین کی زیر سماعت پیش کیا توتمام ہال تالیوں سے گونج اٹھا۔اس موقع پرمرزا محمد یٰسین بیگ صاحب نے مہمانان گرامی اور حاضرین محفل کے ساتھ مل کر پاکستان رائٹرز کونسل کے وائس چیئرمین حسیب اعجاز عاشر کی سالگرہ کا کیک بھی کاٹا ۔تقریب کے اختتام پر پاکستان رائٹرز کونسل کی انتظامیہ جن میں مہر شوکت علی ، محی الدین قصوری، محمد اکبر ودیگرنے پرتکلف عشائیے کا اہتمام کیا۔ حاضرین تقریب نے پاکستان رائٹرز کونسل کے چیئرمین مرزا محمد یٰسین بیگ کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے آئندہ بھی ایسی تقریبات کروانے کی خواہش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ قصور میں ہونے والی اس تقریب کو تا دیر یاد رکھا جائے گا۔





Comments


There is no Comments to display at the moment.



فیس بک پیج


مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2018 apkibat. All Rights Reserved