تازہ ترین  

شہباز شریف کی گرفتاری کے خلاف احتجاج کا اعلان
    |     7 days ago     |    اداریہ
پاکستان مسلم لیگ نون نے پارٹی صدر اور سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کی گرفتاری کے خلاف ملک گیر احتجاج کا اعلان کردیا۔
مسلم لیگ ن کے رانا ثنااللہ نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ اگر کل (منگل) تک قومی اسمبلی اور پنجاب اسمبلی کا اجلاس نہیں بلایا جاتا تو بدھ کے روز دونوں عمارتوں کے باہرشہباز شریف کی گرفتاری کے خلاف اپوزیشن احتجاج کرے گی۔
انہوں نے کہا کہ یہ احتجاج صرف پارلیمنٹ تک محدود نہیں رہے گا بلکہ اس وقت تک جاری رہے گا جب تک قومی اسمبلی کے اجلاس میں قائد حزب اختلاف کو نہیں لایا جاتا اور وہ وہاں اپنا کیس پیش کریں گے جسے پوری قوم سنے اور فیصلہ کرے گی کہ یہ گرفتاری انتقامی کارروائی ہے۔
ان کا کہنا ہے کہ عمران خان کہتے ہیں کہ وزارت عظمیٰ کے دوران کاروبار نہیں کریں گے کیونکہ کاروبار اور کرپشن جہانگیر ترین، علیم خان کریں گے اور ان کی اے ٹی ایم سے فائدہ انہیں ہوگا-
سابق وزیر قانون پنجاب نے کہا کہ موجودہ حکومت کی عوام دشمن کارروائیوں کی وجہ سے عوام کو مہنگائی کا سامنا ہے، غلط پالیسیوں کی وجہ سے چین اور روس جیسے دوست ممالک کو دور کرکے سی پیک کے خلاف ابہام پیدا کیا جارہا ہے۔
رانا ثنااللہ نے کہا کہ ہم ان حکومتی اقدامات کے خلاف بھی احتجاج کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ شہبازشریف کو گرفتارکرنے کا مقصد ضمنی انتخابات پراثرانداز ہونا ہے، جس طرح کی کارروائیاں 25 جولائی سے پہلے کی گئیں یہ اسی کی ایک کڑی ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کی تمام قیادت سے رابطہ کرکے مشترکہ لائحہ عمل بنانے کی فضا ہموار کی جائے گی۔

رانا ثنا اللہ نے شہباز شریف پر لگائے گئے کرپشن الزامات کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ ایک روپیہ نہ اضافی خرچ ہوا ہے اور نہ ہی ایک انچ سرکاری زمین کسی کو دی گئی، صرف ایک کرپٹ ٹھیکیدار کا ٹھیکہ اس وقت کے فنانس سیکریٹری پنجاب کی رپورٹ کی بنیاد پر منسوخ کیا گیا تھا ۔

انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے الزام عائد کیا گیا کہ شہباز شریف نے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرکے ٹھیکہ منسوخ کیا اور اسی مفروضے کی بنیاد پر انہیں گرفتار کیا گیا-
انہوں نے کہا کہ غریب افراد کی دکانوں کو توڑ رہے ہیں اور جو قبضہ گروپ ہیں ان کے قبضے میں موجود زمیںیں کیوں خالی نہیں کروائی جارہیں؟
لیگی رہنما نے کہا کہ عمران خان کہتے ہیں کہ میں جب تک وزیراعظم ہوں تب تک میں کوئی کاروبار نہیں کروں گا، انہوں نے ٹھیک ہی کہا کیونکہ کاروبار اور کرپشن تو جہانگیر ترین، عون چوہدری اور علیم خان کریں گے جبکہ عمران خان ان کی اے ٹی ایم سے فائدہ اٹھائیں گے۔
رانا ثنا اللہ نے کہا کہ میاں شہباز شریف کو گرفتار کرنے کے لیے ناجائز طور پر جو جواز بنایا گیا ہے اس کے بعد کوئی نہ کسی ٹھیکیدار کا ٹھیکہ منظور کرسکتی ہے اور نہ ہی وہ کسی کو کنٹریکٹ دے سکتی ہے۔
انہوں نے کہا کہ میاں شہباز شریف نے تو آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم میں کرپٹ ٹھیکیدار کا ٹھیکہ منسوخ کیا تھا جو نیب سے پلی بارگین کرکے آیا تھا ۔





Comments


There is no Comments to display at the moment.



فیس بک پیج


مقبول ترین

اسلامی و سبق آموز


نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2018 apkibat. All Rights Reserved